کورونا پابندیوں میں نرمی،ان ڈور تقریبات بحال،50فیصد حاضری کیساتھ تعلیمی سرگرمیوں کی اجازت

اسلام آباد(سیاست نیوز) این سی او سی نے کورونا کی چوتھی لہر میں کمی کے بعد پابندیوں میں نرمی کا اعلان کردیا۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے سربراہ اسد عمر کی سربراہی میں این سی او سی کا اجلاس ہوا جس میں ملک بھر میں کورونا صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور کورونا کی صورتحال کو سامنے رکھتے ہوئے اہم فیصلے کیے گئے۔این سی او سی کے مطابق ملک بھر کے تعلیمی ادارے16 ستمبر سے کھولے جائیں گے، تعلیمی ادارے 50 فیصد حاضری کے ساتھ کھولے جائیں گیاور متبادل دن کلاسز ہوں گی۔این سی او سی کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق ماسوائیکورونا پھیلاؤ والے اضلاع کے ملک بھر میں مارکیٹس رات 10 بجے تک کھلی رہیں گی جب کہ رات 12 بجے تک ان ڈور اور آؤٹ ڈور ڈائننگ کی اجازت ہوگی، ویکسینیٹڈ افراد کے ساتھ 200 افراد کی ان ڈور تقریب کی اجازت ہوگی اور آؤٹ ڈور 400 افراد کو تقریبات میں شرکت کی اجازت ہوگی۔نوٹیفکیشن کے مطابق دفاتر میں مکمل حاضری اور نارمل اوقات کار نافذ کردیے گئے ہیں جب کہ سنیما گھر بند رہیں گے، کراٹے، باکسنگ،کبڈی اور واٹراسپورٹس پر پابندی برقرار رہے گی تاہم ویکسینیٹڈ افراد کے لیے 50 فیصد صلاحیت کے ساتھ جمز کھلے رہیں گے۔نوٹیفکیشن میں بتایا گیا ہیکہ ٹرینیں 70 فیصد مسافروں کے ساتھ چلیں گی جب کہ بیرون ممالک سے پاکستان آنے والوں کے لیے سفری پالیسی برقرار رہے گی۔نوٹیفکیشن کے مطابق کورونا پھیلاؤ والے اضلاع پنجاب میں 5 ہیں اور کورونا کیسز کے پھیلاؤ والا خیبرپختونخوا میں ضلع بنوں ہے، کورونا پھیلاؤ والے اضلاع میں ان ڈور تقریبات پر پابندیاں برقرار رہیں گی۔این سی او سی کا کہناہیکہ کورونا کے زیادہ شرح والے اضلاع میں صورتحال کا دوبارہ جائزہ 21 ستمبر کو لیا جائے گا اور مزید فیصلے صورتحال کے پیش نظر روزانہ کی بنیاد پر جائزہ اجلاس میں کیے جائیں گے

متعلقہ خبریں