متاثرین زلزلہ کی آبادکاری کیلئے حکومتی احکامات پر عمل درآمدیقینی بنائیں گے،چیئرمین معائینہ کمیشن

میرپور(سیاست نیوز)چیئرمین وزیراعظم معائنہ وعملدرآمدکمیشن زاہدامین نے کہاہے کہ زلزلہ متاثرین میرپورکی بحالی وآبادکاری کے لیے وزیراعظم آزادکشمیر کے احکامات پرعملدرآمد کویقینی بنایاجائے گا۔ زلزلہ متاثرین کی بحالی،آبادکاری اور تعمیرنوکے لیے مجموعی طورپر8 ارب سے زائد رقم کی فراہمی وفاقی حکومت اور آزادکشمیرحکومت کی ذمہ داری ہے۔ متاثرین زلزلہ کے ریسکیواورریلیف کے کاموں کوشاندارطریقے سے سرانجام دینے پرضلعی انتظامیہ،پولیس،صحت عامہ محکمہ برقیات سمیت دیگرمحکمہ جات این جی اوز،افواج پاکستان، این ڈی ایم اے، ایس ڈی ایم اے سمیت سول سوسائٹی اور فلاحی تنظیموں کاشکریہ اداکرتے ہوئے کہاکہ قدرتی آفات کااگرچہ مقابلہ کرنانہایت ہی مشکل ہے تاہم مشکل کی اس گھڑی میں جس طرح سرکاری اداروں، سول سوسائٹی اور فلاحی تنظیموں نے اپنی قومی اور ملی ذمہ داری سمجھتے ہوئے متاثرین زلزلہ کے لیے ریسکیواورریلیف کے کاموں میں بڑھ چڑھ کرحصہ لیا اس سے جانی نقصانات کم سے کم ہوئے ہیں اور اس کاکریڈٹ ایڈمنسٹریشن کوجاتاہے۔ ان خیالا ت کااظہارانھوں نے کمشنرمیرپورڈویژن چوہدری محمدطیب اور ڈپٹی کمشنرمیرپورراجہ طاہرممتازکی طرف سے 24 ستمبر کے زلزلہ کے سلسلہ میں دی جانے والی الگ الگ بریفنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پروزیراعظم عملدرآمدکمیشن کے ڈائریکٹر فیصل مشتاق، ایس ایس پی میرپورراجہ عرفان سلیم،ڈپٹی ڈائریکٹروزیراعظم معائنہ کمیشن سردارعابدحسین خان،ڈی ایچ او ڈاکٹرفداحسین، ایم ایس ڈاکٹرفاروق احمدنور، اسسٹنٹ کمشنریاسرریاض، ڈائریکٹرپلاننگ ایم ڈی اے کلیم احمدجرال، ایکسین برقیات محمدنذیرمغل، ایکسین راجہ عمرحیات، ایکسین محمدزیاد اکبر، ایکسین پی ایچ ای ارشدمحمود، ایکسین بلدیہ امتیاز علی بٹ، چیف آفیسر ضلع کونسل ارشدمحمود چوہدری، ڈی ای اوراجہ بشارت اقبال،اسسٹنٹ ڈائریکٹر 1122 محمدآصف، اسسٹنٹ ڈائریکٹرلوکل گورنمنٹ راجہ طاہرخالق، انفارمیشن آفیسرمحمدجاوید ملک،سوشل ویلفیئرآفیسرنثاراحمدملک، ڈپٹی ڈائریکٹرایم ڈی ایچ اے ساجد احمد، اسسٹنٹ ڈائریکٹراوقاف محمداقبال، اسسٹنٹ ڈائریکٹر آبپاشی محمدندیم، اسسٹنٹ ڈائریکٹرزراعت محمدطاہر،ایس ڈی او ہائی وے محمدثاقب حسین، ایس ڈی او بلڈنگ بلال احمدخان کے علاوہ دیگرافسران بھی موجود تھے۔ چیئرمین وزیراعظم معائنہ وعملدرآمدکمیشن زاہدامین نے امیدظاہرکی کہ فیڈرل فنانس ڈویژن،این ڈی ایم اے اور آزادحکومت کامالیات ڈیپارٹمنٹ زلزلہ متاثرین کے لیے فنڈز کی فراہمی میں روایتی سرخ فیتے کی راہ نہیں اختیارکریں گے۔ انھوں نے کہاکہ زلزلہ متاثرین کی معاونت اور ریلیف کے لیے آزادکشمیرمنصوبہ بندی وترقیات، لائیوسٹاک، برقیات، جامعات، محکمہ تعلیم اورتعلیمی بورڈ کو خصوصی عملی اقدامات کرنے میں کوئی کسراٹھانہیں رکھنی چاہیے۔انھوں نے کہاکہ زلزلہ متاثرین کے لیے حکومت آزادکشمیرکی طرف سے جس پیکج کااعلان کیاگیاہے اسے پوراکیاجائے گا۔ اس سلسلہ میں حکومت آزادکشمیر اپنے دیگرترقیاتی پروگرام سے جووسائل دستیاب ہیں وہ متاثرین زلزلہ کے لیے دیئے جاسکتے ہیں۔ وزیراعظم آزادکشمیرراجہ محمدفاروق حیدرخان کی ہدایات پرمتاثرین زلزلہ کے لیے فنڈز کی فراہمی کے سلسلہ میں وفاقی حکومت سے مسلسل رابطے میں ہیں جونہی وفاق کی طرف سے فنڈز دستیاب ہونگے تو متاثرین زلزلہ کوپیکج کے مطابق یکمشت ادائیگیاں کی جائیں گی۔ اس موقع پرکمشنرمیرپورڈویژن چوہدری محمدطیب اور ڈپٹی کمشنر راجہ طاہرممتاز نے چیئرمین وزیراعظم عملدرآمدمعائنہ کمیشن کوبتایاکہ 24 ستمبرکے زلزلہ کے باعث چالیس قیمتی جانیں ضائع ہوئی ہیں جبکہ پبلک اورپرائیویٹ سیکٹرمیں اربوں روپے کی مالیت کے نقصانات ہوئے ہیں۔ زلزلہ کے فوری بعد ریسکیوکاعمل شروع کیاگیا اور 12 گھنٹوں کے اندراندراسے مکمل کرلیاگیااس طرح زلزلہ میں زخمی ہونے والوں کے علاج معالجہ کے لیے ڈویژنل ٹیچنگ ہسپتال میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی جہاں زخمیوں کوطبی امداد فراہم کی گئی۔ انھوں نے بتایاکہ زلزلہ سے برقیات کے 28 فیڈربری طرح متاثرہوئے محکمہ برقیات کے عملہ نے رات تین بجے تک اٹھائیس کے اٹھائیس فیڈر سے بجلی بحال کردی جس کے باعث متاثرین کو کوئی پریشانی نہیں ہوئی۔ زلزلہ سے چیچیاں جاتلاں 14 کلومیٹرروڈ بری طرح تباہ ہوئی،نہر اپرجہلم پر تعمیر شدہ چاربرج تباہ ہوگئے، محکمہ شاہرات نے 72 گھنٹوں کے اندراندرچیچیاں جاتلاں روڈ عارضی طورپرٹریفک کے لیے بحال کردی۔ اجلاس میں بتایاگیاکہ ریسکیواورریلیف کے کاموں کے بعد حکومت آزادکشمیرکی طرف سے کرائسزمینجمنٹ سیل قائم کیاگیاجبکہ وزراء حکومت پرمبنی کابینہ کمیٹی قائم کردی گئی، اس طرح زلزلہ متاثرہ علاقوں میں نقصانات کے سروے کے لیے آٹھ زون اور تیس کمیٹیاں بنائی گئیں جوروزانہ کی بنیاد پرہونے والے سروے کاڈیٹا ایک App کے ذریعے تیارکرتے تھے۔ سروے کاکام نہایت ہی صاف اور شفاف طریقے سے کیاگیا۔ انھوں نے بتایاکہ زلزلہ کے فوری بعد وزیراعظم آزادکشمیرکابینہ کے ہمراہ،پاک آرمی،این ڈی ایم اے، ایس ڈی ایم اے،پنجاب اور خیبرپختونخواہ کی حکومتوں، این جی اوز اور سول سوسائٹی نے بھرپورمعاونت کی جس کے باعث ریسکیواورریلیف کے کاموں کوخوش اسلوبی سے مکمل کیاگیاہے۔ چیئرمین وزیراعظم عملدرآمدمعائنہ کمیشن زاہد امین نے زلزلہ متاثرین کی بروقت امداد فراہم کرنے پر پاک آرمی سمیت جملہ اداروں کاشکریہ اداکیا۔

متعلقہ خبریں