کرونا وائرس، حکومتی اقدامات کی تفصیلات جاری، گھر گھر سروے کا فیصلہ

مظفرآباد(سیاست نیوز) کرونا وائرس جیسے موذی مرض نے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے پاکستان میں بھی یہ وائرس داخل ہوچکا ہے حکومت آزاد جموں وکشمیر نے خطہ کے عوام کو اس وبائی مرض سے بچاؤ اور اس کی روک تھام کے لیے پہلے مرحلہ پرہی اعلیٰ سطح پر انتہائی سنجیدہ لیتے ہوئے دورس اقدامات کرتے ہوئے وزیرا عظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان کی سربراہی میں اسٹیٹ کوارڈنیشن کمیٹی کا قیام عمل میں لایا۔کمیٹی میں آزادکشمیر کے وزیر صحت ڈاکٹر نجیب نقی،وزیر اسٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی احمد رضاء قادری،وزیر تعلیم سکولز افتخار گیلانی،چیف سیکرٹری مطہر نیاز رانا،سینئر ممبر بورڈ آف یونیو،سیکرٹری اطلاعات،سیاحت و آئی ٹی،سیکرٹری صحت عامہ، سیکرٹری خزانہ،سیکرٹری ایس ڈی ایم اے،انسپکٹرجنرل پولیس آزادکشمیر،کمانڈر 1AKبرگیڈ، ڈی جی ہیلتھ،ڈائریکٹر جنرل اطلاعات سمیت مظفرآباد، پونچھ اور میرپور کے کمشنرز،ڈی آئی جی،ڈی آئی جی سپیشل برانچ،آرمی 12ڈویژن،ISI،IB کے نمائندے اور ایڈیشنل سیکرٹری ہوم پر قائم کی گئی ہے۔کمیٹی کا روزانہ کی بنیاد پر وزیر اعظم کی سربراہی میں اجلاس منعقد ہوتا ہے جس میں اسٹیٹ کوارڈنیشن کمیٹی کے ممبران کے علاوہ ویڈیو لنک کے ذریعے تمام ڈویژن کے کمشنرز،ڈی آئی جی،ڈپٹی کمشنرز،ایس ایس پیز،ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر زشامل ہوتے ہیں۔اجلاس میں چیف سیکرٹری آزادکشمیر مطہر نیاز رانا دن بھر کی رپورٹ جس میں حفاظتی اقدامات کیے گے فیصلوں پر عملدرآمد،اگاہی مہم کے حوالے سے تفصیلی رپورٹ پیش کرتے ہیں جبکہ سب کمیٹیوں کے سربراہان ڈویژنل کمشنرز اور ڈپٹی کمشنر ز دن بھر کی رپورٹ پیش کرتے ہیں اس طرح حکومت نے اس وباء سے بچاؤ کے لیے مختلف شعبوں کے سیکرٹریز کی سربراہی میں اور ڈپٹی کمشنرز کی سربراہی میں سب کمیٹیاں قائم کرد ی گئی تھیں۔ سب کمیٹیوں میں سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو،ایڈیشنل چیف سیکرٹری ڈویلپمنٹ،سیکرٹری اطلاعات،ڈی جی ہیلتھ سمیت دیگر کمیٹیاں بھی قائم کر رہی ہیں۔آزادجموں و کشمیر کے وزیراعظم راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کرونا وائرس کی آزادکشمیر میں روک تھام اور شہریوں کو اس بیماری سے بچانے کے لیے اہم اور بروقت حفاظتی اقدامات اٹھائے جن میں آزادکشمیر کے تمام انٹری پوائنٹس پربیرون آزادکشمیر سے آنیوالوں کی سکریننگ کا مربوط نظام بنایا،کرونا وائرس کے خدشات کے پیش نظر ڈویژن اور ضلعی سطح پر قرنطینہ سینٹر قائم کردیے گے ہیں۔دارلحکومت مظفرآباد میں نئے وزیر اعظم ہاؤس کو قرنطینہ سینٹر بنا دیا گیا ہے کرونا وائرس کے خدشات کے پیش نظر آزادکشمیر بھر میں ہائی الرٹ جاری کردیا گیا ہے جس کے باعث آزادکشمیر بھر کے تعلیمی ادارے بند کردیے گے ہیں، بین الصوبائی،بین اضلائی اور انٹر سٹی پبلک ٹرانسپورٹ اور کھانے پینے اورادوایات کے سٹورز کے علاوہ تمام کاروباری مراکزبھی بند کردیے گے ہیں حکومت کے بروقت اقدام سے آزادکشمیر بھر کے عوام الناس نے ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے حکومتی ہدایات پر من و عن عمل کرنا شروع کر دیا ہے چونکہ کرونا وائرس کا کوئی علاج نہیں اس لیے حکومت نے اپنے عوام کی زندگیوں کو محفوظ کرنے کے لیے مختلف پابندیاں لگا دی ہیں اس طرح ایڈیشنل چیف سیکرٹری ڈویلپمنٹ کے سربراہی میں ایک اور کمیٹی مانیٹرنگ کا کام کر رہی ہے، ڈی جی ہیلتھ کی سربراہی میں ہیلتھ کمیٹی پورے آزادکشمیر میں لوگوں کے علاج معالجہ،ادوایات اور ایکوپمنٹ کے حوالے سے کام کر رہی ہے۔پورے آزادکشمیر میں 700لیڈی ہیلتھ ورکرز اور سٹاف باہر سے آنیوالے افراد کی پڑتال کر رہا ہے۔سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو کی سربراہی میں بھی ایک سب کمیٹی قائم ہے جس میں کمشنر ز،ڈپٹی کمشنر ز،ڈی آئی جی، ایس ایس پی، شامل ہیں جو بچاؤ،بحالی اور حفاظتی اقدامات کے لیے فل ٹائم کررہے ہیں اس طرح غذائی ضروریات کی مانیٹرنگ کے لیے سیکرٹری خوراک کی سربراہی میں ایک کمیٹی قائم ہے جو غذائی اجناس کی مانیٹرنگ کر رہی ہے،کرونا وائرس سے اگاہی اور احتیاطی تدابیر کو عوام الناس تک پہنچانے کے لیے سیکرٹری اطلاعات کی سربراہی میں کمیٹی قائم کرر ہی ہے جس میں ڈائریکٹر جنرل اطلاعات آزادکشمیر،آزادکشمیر کے صحافتی تنظیموں کے نمائندگان،پریس کلب ہا کے صدور شامل ہیں یہ کمیٹی شروع دن سے حکومت آزادکشمیر کی طر ف سے جاری ہونیوالے احکامات،حفاظتی تدابیر اور کرونا وائرس کی روک تھام کے سلسلہ میں اگاہی مہم کے سلسلہ میں پرنٹ و الیکٹرانک اور سوشل میڈیا کے ذریعے عوام الناس میں پل پل کی اطلاعات فراہم کررہی ہیں آزادکشمیر بھر کے جملہ آفیسران اطلاعات اپنے اپنے اضلاع میں کرونا وائر س کی روک تھام کے حوالے سے ہونیوالے اقدامات کی موثر تشہیر کر رہے ہیں اس طرح ڈویژن کی سطح پر کمشنر ز کی سربراہی میں بھی کمیٹیاں قائم کر رہی ہیں جبکہ ضلعی سطح پر ڈپٹی کمشنر ز کی سربراہی میں کمیٹیاں قائم ہیں۔کرونا وائرس کی روک تھام کے لیے اس وقت تک ہونیوالے تمام حفاظتی اقدامات کے لیے بنائی جانیوالی کمیٹیاں اپنا موثر کردار اداکر رہی ہیں جس کے باعث آزادکشمیر کے تمام انٹری پوائنٹس پر بیرون ممالک سے آنیوالوں کی سکریننگ اور چیکنگ کے لیے انتظامیہ اور ہیلتھ کے افراد کام کر رہے ہیں ضلعی سطح پر بنائی جانیوالی کمیٹیوں میں پٹواری حضرات گھر گھر جاکر سروے کر رہے ہیں۔ حکومت آزادکشمیر نے بیرون ممالک میں اپنے پیاروں سے اپیل کی ہے کہ وہ اس مشکل اور آزمائش کی گھڑی میں غیر ضروری سفر سے گریز کریں جو لوگ بیرون ممالک سے آئے ہیں وہ اپنی اور اپنے عزیز و اقارب کی صحت کے حوالے سے محتاط رہیں کسی بھی قسم کے صحت کے خدشات کے پیش نظر اپنا طبی معائنہ کروائیں۔بیرون ممالک سے آنیوالے افراد کو چودہ دن کے لیے قرنطینہ سینٹر میں رکھا جائیگا۔حکومت آزادکشمیر کی طر ف سے کیے جانیوالے تمام حفاظتی اقدامات اس بات کی عکاسی کرتے ہیں کہ حکومت آزادکشمیر کرونا وائرس کے حوالے سے ہر وہ اقدام کرنے کے لیے تیار ہے جس سے اس وائرس کو روکا جاسکے۔

متعلقہ خبریں