کرونا بحران، معاشی نقصان کا جائزہ لینے کیلئے کمیٹی قائم، رپورٹ طلب

اسلام آباد(سیاست نیوز)وزیر اعظم آزادحکومت ریاست جموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان کی زیر صدارت سٹیٹ کوآرڈینینشن کمیٹی کا اجلاس۔ اجلاس میں کرونا وائر س سے ہونے والے معاشی نقصان کا جائزہ لینے کیلئے سیکرٹری مالیات کی سربراہی میں کمیٹی بنائی گئی جو نقصانات کا جائزہ لیکر رپورٹ پیش کریگی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا آزادکشمیر بھر میں قائم قرنطینہ سینٹر کے سٹاف کو پاک فوج تربیت دے گی۔ تمام ڈپٹی کمشنرز روزانہ چار بجے اپنے اضلاع کی رپورٹ وزیر اعظم کو پیش کرینگے۔ اجلاس میں محکمہ خوراک کو مزید وسائل فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ مساجد میں اعلانات کروائے جائیں گے کہ لوگ غیر ضروری طور پر اپنے گھروں سے باہر نہ نکلیں۔ اجلاس میں ہوٹلز اور پبلک ٹرانسپورٹ کو بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیاکہ سرکاری ملازمین دفاتر میں احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوئے کام کریں گے اور تین فٹ کے فاصلے پر بیٹھیں گے۔اجلاس میں انتظامیہ کی وزیر اعظم کو کرونا وائرس کی تازہ صورتحال کے حوالہ سے بریفنگ۔اجلاس کو بتایا گیا کہ ایمز مظفرآباد میں کرونا ٹیسٹ کی آزمائشی سروس شروع کر دی گئی ہے۔ اجلاس میں انٹری پوائنٹس پر چیکنگ کی صورتحال اور انتظامات کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس ویڈیولنک کے ذریعے منعقد ہوا جس میں وزیرصحت ڈاکٹر نجیب نقی، وزیر سٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی احمد رضا قادری، چیف سیکرٹری مطہر نیاز رانا، ڈویژنل کمشنرز،ڈی آئی جیزاور تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز نے شرکت کی۔اجلاس میں و زیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان نے ہدایت کی ہے کہ بیرون ملک سے آنے والے افراد کو جلد ا زجلد ٹریس کر کے ان کے ٹیسٹ لیکر قریبی قرنطینہ سینٹر میں منتقل کیاجائے، انٹری پوائنٹس پر چیکنگ کو مزید بہتر کیا جائے، تمام ڈپٹی کمشنرزروزانہ چار بجے سے قبل کارکردگی رپورٹ پیش کریں۔غذائی ضروریات کی کمی کی فی الفور پورا کیا جائے، گراں فروشی کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن اور ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے، شہری غیرضروری طور پرگھروں سے باہر نہ نکلیں اور احتیاطی تدابیر بروکار لائیں۔ وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ لیڈی ہیلتھ ورکرز/ وزٹرز کی ٹیمیں تشکیل دی جائیں جو گھر گھر وزٹ کریں، حکومتی اقدامات پر سو فیصد عملدرآمد کروایا جائے، مساجد میں اعلانات کروائیں جائیں کہ لوگ اپنے گھروں سے باہر غیر ضروری طور پر نہ نکلیں۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہاکہ کرونا وائرس کا واحد حل اس کے پھیلاؤ کور وکنا ہے۔مخیر حضرات اس موقع پر غرباء کا خیال رکھیں۔ آقا کریمﷺ کے صدقے اللہ رب العزت ہمیں اس مصیبت سے چھٹکارا حاصل کرنے کی توفیق دیں۔ انہوں نے کہاکہ آزادکشمیر گزشتہ18سالوں سے پولیو فری سٹیٹ ہے، اللہ کی تائید و نصرت سے کرونا سے بھی نمٹیں گے۔انہوں نے انتظامیہ کو ہدایت کی کہ کرونا وائر س کے مریضوں نے آپ کے پاس نہیں آپ ان کے پاس جائیں۔ میڈیا، سول سوسائٹی اور تمام سیاسی و مذہبی جماعتیں کرونا سے نمٹنے کیلئے آگے آئیں۔ انہوں نے کہاکہ بھرپور تعاون پر میڈیا، سول سوسائٹی، تاجران کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ حکومتی اقدامات عوام کی حفاظت کیلئے ہیں، آپ سب نے اپنی اور اپنے پیاروں کی حفاظت کرنی ہے۔ اللہ رب العزت ہمیں اس سے نمٹنے کا حوصلہ دیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ہ صحت کی خرابی کی وجہ سے ابھی سفر نہیں کر سکتا مگر روزانہ کی بنیاد پر کارکردگی کا جائزہ لے رہا ہے اور لمحہ بہ لمحہ کی صورتحال سے آگا ہ ہوں۔ انہوں نے کہا کہ عوام کے تعاون کے بغیر حکومتی اقدامات کامیاب نہیں ہو سکتے۔ یہ ہم سب کی قومی ذمہ داری ہے کہ کرونا وائر سے نمٹنے کیلئے حکومتی اقدامات پر عمل کریں۔ وزیر اعظم نے کہاکہ عوام حکومتی اداروں کے ساتھ مکمل تعاون کریں تمام اقدامات آپ کی حفاظت کے لیے ہیں۔ مشکل کی اس آزمائشی گھڑی میں صاحب استطاعت لوگ زیادہ سے زیادہ صدقات دیں۔ کرونا نے دنیا میں تبائی مچائی ہے اس کی ویکسین ابھی تک نہیں بنی،شہری بچاو کے لیے حفاظتی اقدامات کریں

متعلقہ خبریں