مقبوضہ کشمیر، لاک ڈاؤن کے باعث خوراک ادویات کی شدید قلت

سری نگر(سیاست نیوز) مقبوضہ کشمیر میں کورونا وائرس کے سبب لاک ڈاون مزید سخت ہونے کے باعث علاقے میں بنیادی اشیائے ضروریہ کی سخت قلت پیدا ہوگئی ہے اور کشمیری تازہ سبزیوں، پھلوں کیساتھ ساتھ دودھ اور روٹی سے محروم ہو رہے ہیں جبکہ بچوں کی غذائی اشیابھی نایاب ہو چکی ہے۔مسلسل محاصرے اور کرفیو جیسی پابندیوں کے سبب لوگوں میں ذہنی دباو میں اضافہ ہو رہا ہے اوربنیادی سہولیات کے فقدان کے نتیجے میں مشکلات کا شکار ہیں۔ سرینگر سول لائنز کے کئی علاقوں کے رہائشیوں نے بتایا کہ بھارتی انتظامیہ انہیں کورونا سے بچنے کیلئے احتیاطی تدابیر اپنانے کیلئے کہہ رہی ہے لیکن لوگ گھروں میں بھوک پیاس سے مر رہے ہیں۔ القمرآن لائن کے مطابق عالی کدل سے تعلق رکھنے والے غلام محمد نے بتایا کہ لوگوں کے گھروں میں تازہ سبزیاں، سبزیاں اور دودھ موجود نہیں۔ انہوں نے کہاکہ نانبائیوں نے بھی اپنی دکانیں بند کر رکھی ہیں جبکہ دودھ کی ہوم ڈیلوری بھی نہیں ہورہی ہے۔ متعدد علاقوں میں دودھ سپلائی کرنے والوں کو بھی روک دیا گیا۔ شہر سرینگر میں اس وقت جو دودھ پہنچ رہا ہے وہ چاڈورہ، پلوامہ، بڈگا م اور دیگر علاقوں سے آتا ہ

متعلقہ خبریں