گلگت بلتستان کو صوبہ بنانا اقوام متحدہ کی قراردادوں کے منافی ہے،جماعت اسلامی

لندن(سیاست نیوز) جماعت اسلامی آزادجموں وکشمیر کے امیر ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان ریاست جموں وکشمیر کا تاریخی اور جغرافیا ئی طور پر حصہ ہے جب تک کشمیریوں کو حق خودارادیت کے ذریعے آزاد ی نہیں مل جاتی اس وقت تک یہ وحدت کشمیر اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے منافی ہے،ہندوستان کے5اگست کے اقدامات کے بعد اگر یہاں سے بھی ایسا اقدام ہوا تو یہ ہندوستان کے اقدامات جو جواز فراہم کرنے کا باعث بنے گا،وحدت کشمیر کے حوالے سے جماعت اسلامی کوئی کمپرمائز نہیں کرے گی،جماعت اسلامی گلگت بلتستان کے انتخابات میں بھرپور حصہ لے رہی ہے جماعت اسلامی واحد ریاستی جماعت ہے جس کا نظم آزادکشمیر اور گلگت بلتستان میں ایک ہی ہے ان خیالات کااظہار انہوں نے میڈیا انٹرویوز اور تقاریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہاکہ گلگت بلتستان کے عوام کو آزادکشمیر طرز کا با وقار نظام حکومت دیا جائے کوئی ایسا اقدام جس سے عالمی سطح پر پاکستان کا موقف کمزور ہو اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مغائر ہو ہمیں کسی صورت قبول نہیں،گلگت بلتستان اور آزادکشمیر کا صدر ایک وزراء اعظم دو ہائی کورٹ دو اور ایک سپریم کورٹ ہو،دونوں قانون ساز اسمبلیوں کو با اختیار بنایا جائے صوبوں سے زیادہ حقوق فراہم کیے جائیں،عبوری صوبہ بنانے سے کشمیریوں کی لازوال بے مثل جدوجہد کو نقصان اور ہندوستان کے اقدامات کو جواز ملے گا،انہوں نے کہاکہ گلگت بلتستان کے انتخابات میں جماعت اسلامی نے امیدوار میدان میں اتار دئیے ہیں مذہبی ہم آہنگی تحریک آزادی کشمیر کے حوالے سے تمام مکاتب فکر کو جمع کرنے کے لیے جدوجہد کی،عوامی ایکشن کمیٹی کے چیئرمین جماعت اسلامی کے رکن مولانا سلطان رئیس ہیں،حق خودارادیت اور وحدت کشمیر پر آزادکشمیر کی ساری جماعتیں متحد و متفق ہیں،ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ حق خودارادیت کے حصول تک ہمیں اپنی صفوں میں اتحاد برقرار رکھنا چاہیے کشمیری اپنے ووٹ کے زریعے اپنے مستقبل کا فیصلہ کریں گے کشمیریوں کا جو بھی فیصلہ ہو گا وہ ہم دل و جان سے قبول کریں گے،ہم کشمیر کو آزاد کروائیں گے اور پاکستان کو اسلامی اور خوشحال پاکستان بنائیں گے، انہوں نے کہا کہ پوری حریت قیادت جیل میں بند ہے جماعت اسلامی کی ساری قیادت جیلوں میں بند ہیں ہمیں ان کی آزادی کے لیے اپنی صفوں میں اتحاد و یکجہتی رکھنا چاہیے،انہوں نے کہاکہ ہندوستان کے 5اگست کے اقدامات کے بعد جماعت اسلامی نے آزادکشمیر گلگت بلتستان اور پورے پاکستان میں کشمیربچاؤ مارچ منعقد کیے اور رائے عامہ ہو ہموار کیا جماعت اسلامی پاکستان نے ہمیشہ کشمیریوں کی پشتیبانی کا حق ادا کیا اور پوری قوم کو کشمیریوں کی پشت پر لا کھڑا کیا،انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی سطح پر تحریک کشمیر برطانیہ اور تحریک کشمیر یورپ نے ہندوستان کے مظالم کو اجاگر کرنے میں بہت اہم کردار ادا کیا وزارت خارجہ سے زیادہ اہم کردار ادا کیا۔انہوں نے کہاکہ کشمیری پاکستان کی تکمیل بقاء اور سلامتی کی جنگ لڑرہے ہیں اور اپنے شہداء کو پاکستان کے پرچموں میں سپر دخاک کررہے ہیں ایسے میں یہاں سے کوئی ایسا اقدام نہیں ہو نا چاہیے جس سے منفی پیغام جائے۔

متعلقہ خبریں