جامعہ کوٹلی، اکیڈمک کونسل میں 2 نئے منصوبے منظور،آن لائن کلاسزجاری رکھنے پر اتفاق

کوٹلی (سیاست نیوز)یونیورسٹی آف کوٹلی کی اکیڈمک کونسل کے چوتھے اجلاس کا انعقاد۔ صدارت وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر سید دلنواد احمد گردیزی نے کی۔اجلاس میں انڈرگریجویٹ و پی ایچ ڈی پالیسی سمیت مختلف تعلیمی، تدریسی اور تحقیقی امور زیر بحث لائے گئے۔علاوہ ازیں نئے پروگرامز کی منظوری، فیکلٹی آف سائنسز کے نئے نام کی منظوری اور گزشتہ اجلاس کے فیصلوں کی توثیق بھی عمل میں لائی گئی۔تفصیلات کے مطابق یونیورسٹی آف کوٹلی آزاد جموں و کشمیر کی اکیڈمک کونسل کا چوتھا اجلاس وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر سید دلنواز احمد گردیزی کی زیر صدارت ویڈیو کانفرنسنگ روم میں ایس او پیز کے مطابق منعقد ہوا۔ اکیڈمک کونسل کے دیگر ممبران میں وائس چانسلر میرپوریونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی پروفیسر ڈاکٹر مقصود احمد، رجسٹرار آزاد جموں و کشمیر یونیورسٹی مظفرآباد پروفیسر ڈاکٹر عائشہ سہیل، نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آباد سے ڈاکٹر شاہین اختر آن لائن شریک تھی اس کے علاوہ یونیورسٹی آف کوٹلی کے ڈین فیکلٹی آف مینجمنٹ سائنسز پروفیسر ڈاکٹر مشتاق احمد ساجد، ڈین فیکلٹی آف سوشل سائنسز اینڈ ہیومنٹیز پروفیسر ڈاکٹر محمد معروف خان، ڈین فیکلٹی آف کمپیوٹنگ اینڈ انجینئرنگ ڈاکٹر افتخار حسین، ڈین فیکلٹی آف سائنسز ڈاکٹر اسد حسین شاہ، رجسٹرار و سیکرٹری اکیڈمک کونسل ڈاکٹر فہیم غفنفر، ٹریثرر ڈاکٹر صباحت اکرم، کنٹرولر ایگزامینیشن لیاقت حسین اور تمام شعبہ جات کے انچارچ موجود تھے۔ اجلاس کا باضابطہ آغاز تلاوت کلام پاک سے کیا گیا۔ اپنے ابتدائی کلمات میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر سید دلنواز احمد گردیزی نے کہا کہ یونیورسٹی آف کوٹلی نے مختصر عرصہ میں اعلیٰ تعلیم کے میدان میں کئی سنگ میل عبور کیے اور اپنے اہداف کے حصول میں کامیابی کے ساتھ آگے بڑھ رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس دور جدید میں معیاری تعلیم ہی ترقی و خوشحالی کا واحد ذریعہ ہے اس کے بغیر کوئی بھی ملک یا قوم ترقی نہیں کر سکتا۔ ہمیں نصاب میں عہد نو کے مطابق جدت لانا ہو گی۔ اجلاس میں ڈاکٹر فہیم غضنفر نے معزز ممبران کے سامنے ایجنڈا آئٹمز پیش کیے جس پر تمام اکیڈمک کونسل ممبران نے اپنی قیمتی آراء سے آگاہی دی۔اجلاس میں انڈرگریجویٹ و پی ایچ ڈی پالیسی سمیت مختلف تعلیمی تدریسی اور تحقیقی امور زیر بحث لائے گئے۔ اکیڈمک کونسل نے اپنی اس میٹنگ میں فیکلٹی آف کمپیوٹنگ اینڈ انجینئرنگ کے دو نئے پروگرامز آرٹیفیشل انٹیلیجنس اور ڈیٹا سائنس کی منظوری دی اس کیساتھ فیکلٹی آف سائنسز کے نئے نام جو فیکلٹی آف بیسک اینڈ اپلائیڈ سائنسز ہو گا کی بھی منظوری دی۔ اجلاس میں کرونا وبا کے تیزی سے پھیلاؤ کی صورت میں اگلا سمسٹر بھی آن لائن طرز تدریس کیساتھ اجراء پر اتفاق کیا گیا نیز گزشتہ اجلاس کے فیصلوں کی توثیق بھی عمل میں لائی گئی۔ میٹنگ کے اختتام پر پروفیسر ڈاکٹر سید دلنواز احمد گردیزی نے اجلاس میں میں شریک تمام ممبران خاص کر پروفیسر ڈاکٹر مقصود احمد کا تشریف آوری پر شکریہ ادا کیا اور اس عزم کو دہرایا کہ تعلیمی عمل کو جاری رکھنے اور آن لائن تعلیم کو بہتر سے بہتر بنانے کے لیے تمام ممکنہ اقدامات جاری رکھے جائیں گے

متعلقہ خبریں