ڈاکٹرز کیلئے انسانی جانوں کو بچانے کا جذبہ متزلزل نہیں ہونا چاہیے، نثار انصرابدالی

میرپور(سیاست نیوز) آزاد کشمیر کے وزیر صحت عامہ نثار انصر ابدالی نے کہاکہ وزیراعظم آزاد کشمیر سردار عبدالقیوم نیازی کی ہدایات پر آزاد کشمیر بھر میں لوگوں کو علاج معالجہ کے لیے صحت کی سہولیات کی فراہمی کے لئے ہرممکن اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔میرپور کے علاوہ مظفرآباد اور کوٹلی میں امراض قلب کے ہسپتال بنائیں گے۔ہسپتالوں میں صحت سہولت کارڈ کے ساتھ احساس پروگرام کارڈ کو بھی شامل کریں گے۔وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی طرف سے 520 ارب روپے کے پیکج سے آزاد کشمیر بھر کے ہسپتالوں میں علاج معالجہ اور ہسپتالوں کی عمارات بھی تعمیر کریں گے۔جن ہسپتالوں میں صحت سہولیات کے مختلف شعبہ جات میں کمی ہیں وہ بھی پوری کریں گے۔میرپور کارڈیالوجی سنٹر کا راولپنڈی انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے ساتھ ایک ہفتہ میں MOU کروایا جائے اور یہاں صحت کارڈ کی سہولت فراہم کی جائے۔ ڈویژنل ٹیچنگ ہسپتال میرپورمیں 60لاکھ روپے کی لاگت سے آکسیجن پلانٹ لگائیں گے اور پورے ہسپتال کو آکسیجن ہر بیڈ پر مہیا ہوسکے گی۔ حکومتی ہدایات پر لوگوں کے علاج معالجہ کی سہولیات کی فراہمی میں شعبہ طب سے وابستہ افراد اپنے فرائض منصبی میں کسی قسم کی لاپرواہی نہیں ہونی چاہیے۔ڈاکٹرز کے لئے انسانی جانوں کو بچانے کا جذبہ کسی صورت متزلزل نہیں ہونا چاہیے۔جس نے ایک جان بچائی اس نے پوری انسانیت کو بچا لیا یہ طب سے وابستہ ہر فرد کے لیے فخر کا مقام ہے۔ہسپتالوں میں ڈسپلن کے قیام کے لیے جملہ افسران و ملازمین کی حاضری بائیو میٹرک کریں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے دورہ میرپور کے دوران ڈویژنل ٹیچنگ ہسپتال میرپور میں کشمیر کارڈیالوجی سنٹر کے دورہ کے دوران ہسپتال کے حوالے سے دی جانے والی بریفنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ایم ایس ڈاکٹر فاروق احمد نور نے انہیں ڈویژنل ٹیچنگ ہسپتال کے متعلق بریفنگ دی اور ہسپتال کے متعلق جملہ مسائل بھی بیان کیے۔اس موقع پر ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر فدا حسین راجہ،میڈیکل کالج کے وائس پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر طارق مسعود،پروفیسر ڈاکٹر محمد ریاض،پی ایم اے کے صدر راجہ اعجاز احمد خان،پروفیسر ڈاکٹر سعید عالم،پروفیسر ڈاکٹر زاہد قاسم،ڈی ایم ایس ڈاکٹر ارم بتول سمیت دیگر ڈاکٹرز صاحبان بھی موجود تھے۔اس موقع پر انہیں بتایا گیا کہ کورونا وائرس کے دوران ڈویژنل ٹیچنگ ہسپتال میں پی سی آر لیب قائم ہوئی جہاں 90 ہزار سے زائد ٹیسٹ کیے گے اس طرح ضلع میں کورونا ویکسینیشن کرنے میں بھی ضلع میرپور پاکستان بھر میں سہرفہرست رہا جس پر ہسپتال انتظامیہ، ڈی ایچ او،پی سی آر لیب کا عملہ سمیت جملہ ڈاکٹر ز اور دیگر طب کے سٹاف کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے انھیں شاباش دیں۔اجلاس میں کورونا وائرس، میرپور زلزلہ کے دوران اور روزانہ کی بنیاد پر او پی ڈی، ایمرجنسی میں مریضوں اور ر کیتھ لیب کے متعلق،ہسپتال کی نئی عمارت کے لئے فیز ٹو کے لئے 500 بستروں کی عمارات کی تعمیر سمیت دیگر مسائل بیان کیے۔وزیر صحت نثار انصر ابدالی نے کہاکہ ہسپتال کے لئے فیز ٹو کے تحت بننے والی عمارت کی ڈیزائننگ،فرنیچر، ہیلتھ ایکوپمنٹ سمیت دیگر سہولیات کی تنصیب کے لئے ضرورت کے مطابق ڈیزائن کروائی جائیں تاکہ آئندہ کے لئے کسی قسم کی مشکلات کا سامنا نہ کرنے پڑے۔انہوں نے کہاکہ ڈویژنل ٹیچنگ ہسپتال میں بننے والے نئے آپریشن تھیٹر کی تعمیر کے لئے جدید طرز کی سہولیات کی فراہمی کے لئے آپریشن تھیٹر کے متعلقہ سپیشلسٹ ڈاکٹرز سے بھی تجاویز لیں گے۔ نئی بلڈنگ میں ایمرجنسی راستہ،فائر کنٹرول سمیت دیگر ضروریات کے لئے ڈیزائن میں تبدیلی کروائی جاسکتی ہیں۔انہوں نے ایم ایس کو ہدایت کی کہ ہسپتال میں ماہر ڈاکٹروں کی او پی ڈی اور داخل مریضوں کے چیک اپ کا باقاعدہ ریکارڈ ہونا چاہیے اس سلسلہ میں دن اوررات میں اوپی ڈی،وارڈ،آپریشن تھیٹر اور آن کال سپیشلسٹ ڈاکٹرز کے وزٹ باقاعدگی سے ہونے چاہیے۔۔صرف پی جی کے ذریعے ہسپتال نہیں چلائے جاسکتے۔میرپور ڈویژنل ٹیچنگ ہسپتال آزاد کشمیر کا بہترین ہسپتال ہے اس حوالے سے جملہ ڈاکٹرز،پیرا میڈیکل سٹاف،نرسنگ سمیت دیگر سٹاف بالخصوص سپیشلسٹ ڈاکٹرز کی حاضری سوفیصد ہونی چاہیے۔ہسپتال کے دستیاب وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے ہیلتھ سروسز میں کسی قسم کی کمی کوتاہی نہیں ہونی چاہیے۔جن جن شعبہ جات میں کمی ہے ان کو دور کیا جائے۔انہوں نے مزید کہاکہ صدر ریاست جموں و کشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری اور وزیراعظم آزاد کشمیر سردار عبدالقیوم نیازی کی ہدایات پر آزاد کشمیر بھر میں ہیلتھ کی سروسز میں کوالٹی پر کوئی کمپرومائز نہیں ہوگا۔لوگوں کو ہسپتالوں سے صحت کی سہولیات ملنی چائیں نہ کہ شکایات کہ ہسپتالوں میں ڈاکٹرز موجود نہیں ہیں اس سلسلہ میں جملہ ایم ایس صاحبان خود ہسپتال کی مانیٹرنگ کریں اور ہسپتالوں میں ہیلتھ سسٹم کو بہتر بنائیں۔حکومتی سطع پر جہاں جہاں وسائل کی دستیابی ہوگی اس کو پورا کرنے کے لئے تحریک کی جائے۔ہسپتالوں میں آنے والے مریضوں کے ساتھ رویہ درست رکھا جائے مریضوں اور لواحقین کی جائز شکایات کافوری ازالہ کیا جائے۔بعدازاں انھوں نے ڈویژنل ٹیچنگ ہسپتال کی کیتھ لیب،میڈیکل وارڈ،چلڈرن وارڈ،ڈائیلاسز سینٹرسمیت دیگر شعبہ جات کا بھی معائنہ کیا اور مریضوں سے ہسپتال میں فراہم کی جانیوالی سہولیات کے متعلق پوچھا۔

متعلقہ خبریں