میرپور(بیورو رپورٹ)صدر ریاست آزاد جموں وکشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر میں بلدیاتی انتخابات کے کامیاب انعقاد کے بعد اقتدار حقیقی معنوں میں نچلی سطح پر منتقل ہو چکا ہے۔ میں نے جب صدر ریاست کے عہدے کا حلف اٹھایا تھا تو میں نے عوام سے تین وعدے کیے تھے جن میں دو پورے ہو چکے ہیں، ایک مسئلہ کشمیر کو آزادی کے بیس کیمپ سے جارحانہ انداز میں عالمی سطح پر اجاگر کرنا، دوسرا بلدیاتی انتخابات کا انعقاد تھا۔راجہ نویداختر گوگا ضلع میرپور سے بلا مقابلہ چیئرمین ضلع کونسل منتخب ہوئے ہیں یہ آزاد کشمیرکے بلدیاتی انتخابات کی تاریخ میں پہلی بار ہوا ہے اس سے قبل کوئی بلا مقابلہ چیئرمین ضلع کونسل منتخب نہیں ہوا اس پر میں راجہ نویداختر گوگا کو مبارکباد پیش کرتا ہوں اور امید کرتا ہوں کہ وہ عوامی توقعات پر پورا اتریں گے۔آزاد کشمیر میں 32سال بعد بلدیاتی انتخابات کا انعقاد ہوا ہے یہ عوام کا دیرینہ مطالبہ تھا میں سمجھتا ہوں کہ اقتدار کی نچلی سطح پر منتقلی کے بغیر آزاد کشمیر میں حقیقی تبدیلی لانا ممکن نہ تھا اب بلدیاتی انتخابات کے بعد عوامی نمائندوں کو اقتدار منتقل ہو چکا ہے آنے والے دنوں میں عوام اس کے ثمرات سے مستفید ہوں گے۔ ہم بلدیاتی اداروں کو مضبوط کریں گے ان کو کسی قسم کی فنڈز میں کمی نہیں ہونے دیں گے۔ صدر ریاست کی حیثیت سے میں نے امریکہ، برطانیہ، یورپ، ترکی اورمشرق وسطی کے دورے کیے اقوام متحدہ میں ڈیڑھ کروڑ کشمیریوں کی ترجمانی کی ریاست کے اندر موجود تمام سیاسی جماعتوں کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کر کے آل پارٹیز کشمیر کانفرنس کا انعقاد کیا پہلی بار آزاد کشمیر میں تمام سیاسی جماعتوں نے اپنے اپنے سیاسی نظریات کو بالائے طاق رکھ کر کشمیر ایشو پر متفق ہو کر جدوجہد پر اتفاق کیا۔ ان خیالات کا اظہار صدر ریاست آزاد جموں وکشمیربیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے حلقہ کھڑی شریف میں چیئرمین ضلع کونسل راجہ نوید اختر گوگا کی رہائش گاہ پر منعقدہ افطار ڈنر کے اجتماع سے بطور مہمان خصوصی خطاب میں کیا۔

متعلقہ خبریں