نئی دہلی (کے این این) بھارت کی انتہا پسند مودی سرکار نے فول پروف سکیورٹی کے نام پر کشمیریوں کے قتل و غارت کا گھناؤنا منصوبہ تیار کر لیا۔نجی ٹی وی کے مطابق مقبوضہ کشمیر کو جی 20 اجلاس سے قبل ہی فوجی چھاؤنی میں بدل دیا گیا ہے،وادی بھر میں کشمیریوں کے احتجاج کے خوف سے گرفتاریاں، نظر بندیاں اور گم شدگیاں جاری ہیں۔ 21 اپریل سے ابتک 4 ہزار کشمیری مسلمانوں کو گھروں سے گرفتار کر لیا گیا۔گھروں سے اٹھائے گئے افراد میں مظلوم گھریلو خواتین کی بھی بڑی تعداد شامل ہے جو 500 سے زائد بتائی گئی ہے۔ غیر قانونی گرفتاریاں پلوامہ، اننت ناگ، سری نگر، پونچھ اور بارہ مولا کے اضلاع میں کی گئیں۔ نظر بند کئے گئے افراد میں حریت رہنما، امام مسجد اور مدرسوں کے منتظم شامل ہیں۔

متعلقہ خبریں