باغ(ڈسٹرکٹ رپورٹر)باغ میں قتل کی لرزہ خیز واردات، گاؤں ڈھل قاضیاں کے 21 سالہ نوجوان زوہیب کو رات 2 بجے گھر کے قریب گولیاں مارکر قتل کر دیا، 2 ملزمان موقع واردات سے گرفتار،بھاگنے والے 4 ملزمان کو کوہالہ سے گرفتار کر لیا گیا، واردات میں استعمال ہونے والی پراڈو گاڑی ضبط، آلہ قتل برآمد، نعش پوسٹ مارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے کر دی گئی، قاتلوں نے، مقتول خاندان سے شادی کی ہوئی تھی اور فریقین کے مابین اختلافات تھے، قتل میں ملوث 2 ملزمان عادی جرائم پیشہ بتائے جاتے ہیں جن کے خلاف راولاکوٹ کے مختلف تھانوں میں متعدد مقامات درج ہیں، تفصیلات کے مطابق باغ شہر کے نواحی گاؤں ڈھل قاضیاں میں معمولی تنازعہ پر 21 سالہ نوجوان زوہیب اعوان ولد ندیم کو گولی مار کر قتل کر دیا گیا، قتل کی واردات رات 2بجے کے قریب ہوئی، شور شرابہ سن کر مقامی لوگ گھروں سے باہر نکل آئے اور بھاگتے ہوئے ہوئے 2 ملزمان فیض اکبر ولد یعقوب ساکن پاچھیوٹ اور اویس ولد محمد حسین کو موقع واردات سے گرفتار کر لیا گیا، 4 ملزمان ریحان، شفقت آزاد, ریحان عکاش، زبیر رزاق اور نادر ریحان اسلحہ لہراتے ہوئے پراڈو گاڑی پر موقع واردات سے فرار ہو گئے جنہیں باغ پولیس نے ناکہ بندی کرتے ہوئے کوہالہ سے گرفتار کر لیا،پولیس نے واردات میں استعمال ہونے والی گاڑی ضبط کر لی اور اسلحہ بھی برآمد کر لیا ہے، معلوم ہوا ہے واردات میں جرائم پیشہ افراد کو ایک منصوبہ بندی کے تحت لا کر واردات کی گئی ہے، ملزمان ریحان اور فیض اکبر کے بارے میں معلوم ہوا کہ عادی مجرم ہیں جن کے خلاف راولاکوٹ کے مختلف تھانوں میں اغوا قتل ڈکیتیوں اور دیگر جرائم میں متعدد مقامات درج ہیں، عوامی حلقوں نے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ملزمان کو کڑی سے کڑی سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ خبریں